syed-iqrar-ul-hassan-at-university-of-sargodha 139

جامعہ سرگودھا میں صاف اور سرسبزپاکستان مہم کے تحت سیمینار کا انعقاد

شعبۂِ علومِ ابلاغیات کی جانب سے جامعہ سرگودھا میں صاف اور سرسبز پاکستان مہم کا انعقاد کیا گیا۔

جس کی صدارت مشہورو معروف ٹی وی اینکر پرسن سیّد اقرار الحسن نے کی۔

طلباء و طالبات نے ہر دلعزیز شخصیت اقرار الحسن کا استقبال شاندار انداز میں کیا۔

اُن کی آمد پر طلباء کی جانب سے اُن پر پھول کی پتیاں نچھاور کی گئیں۔

تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوتِ قرآنِ پاک سے کیا گیا۔ جس کے بعد بغیر کسی تعطل کے اقرار الحسن خطاب کیلئے تشریف لائے۔ اقرار الحسن نے طلباء کا جوش دیکھ کر اُن کیلئے تالیاں بجوائیں۔

اُنہوں نے تمام شرکاء کے سامنے اپنا ایک راز فاش کیا کہ وہ 2002-2001 میں اس تعلیمی ادارے کے پلیٹ فارم سے تین مرتبہ تقریری مقابلوں میں ٹیم ٹرافی جیت چکے ہیں۔

syed-iqrar-ul-hassan-at-university-of-sargodha

اپنے پروگرام سرِعام کے حوالے سے انہوں نے بتایا کہ اس کے 500 پروگرامز ہم نے مکمل کر لیے ہیں۔ جس میں انہوں جعلی اور غیر معیاری اشیاء بنانے والی فیکٹریوں اور اس کے علاوہ کئی رشوت خوروں کو پکڑا۔

انہوں نے بتایا کہ ٹیم سرِعام کے ممبران کی تعداد کم و بیش 12 لاکھ ہوچکی ہے۔ جبکہ غیر ممالک میں ممبران کی تعداد ستر ہزار سے تجاوز کر چکی ہے۔ ٹیم کا حصہ بننے کیلئے کسی بھی قسم کی کوئی فیس یا عطیہ نہیں ہے۔ ملک کے 706 شہروں میں میرٹ کی بنیاد پر ٹیم میں نوجوانوں کو عہدے دیے گئے ہیں۔

ٹیم سرِعام کی حالیہ دنوں حاصل کی گئی کامیابیوں کے حوالے سے آگاہ کرتے ہوئے اُن کا کہنا تھا کہ پچھلے سال 25 دسمبر کو کراچی میں 20 کلومیٹر تک لوگ لائنوں میں لگ کر رجسٹریشن کرواتے رہے۔ جنہوں نے مزارِ قائد سے لے کر یونیورسٹی روڈ تک کی دیواریں صاف کیں۔ نوجوانوں کے ساتھ ساتھ 65 سالہ ادھیڑ عمر شخص بھی اس کارِ خیر میں پیش پیش نظر آئے۔

رنگ بنانے والی کمپنیز نے بھی ٹیم سرِ عام کا بھرپور ساتھ دیا۔

انہوں نے بتایا کہ اس سال رمضان المبارک میں تھلیسیمیا کے مریضوں کیلئے 19700 خون کی بوتلوں کا انتظام کیا گیا۔ اگست کی پہلے نو دنوں میں 14 لاکھ پودے لگانے گئے۔ اور 14 اگست تک ان کی تعداد 20 لاکھ تک پہنچ گئی۔

اقرار الحسن نے اعلان کیا کہ 16 دسمبر کو وہ ہر ضلع میں شہدائے آرمی پبلک کے نام پر ایک سرکاری سکول کی مرمت کروائیں گے۔

university girls

اپنے منشور میں انہوں نے حقوق العباد پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب کو ایک دوسرے کا خیال رکھنا چاہئے۔ ہمارے معاشرے کا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ہم حقوق اللّٰہ کے ٹھیکیدار بن گئے ہیں۔ اسلام نے ہمیں سکھایا کہ اپنے مسلمان بھائی کی جانب مسکرا کر دیکھو۔ یورپ نے انہی اسلامی اقدار کو اپنایا ہوا ہے جس کی وجہ سے وہ کامیاب ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ مسئلہ ہمارے ماحول کا ہے جس نے ہمارے اندر کے پاکستانی کو گندلا دیا ہے۔

طلباء و طلبات کو یہ نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اپنے پاکستانی پاسپورٹ کی عزت بنانی ہے۔ پاکستان صرف ہمارے حکمران نہیں بدلیں گے بلکہ آپ خود بھی بدلیں گے۔ ہمیں ہر میدان میں پاکستان کا پرچم بلند کرنا ہے۔

اختتامی لمحات میں انہوں شعبۂِ علومِ ابلاغیات کے ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ اور انتظامیہ کے ساتھ ساتھ ای میڈیا سوسائٹی کی کاوشوں کو سراہا۔ اس کے بعد سوال و جواب کا ایک سیشن رکھا گیا جس میں طلباء و طالبات نے اقرار الحسن سے سوالات کیے۔

تقریب کے بعد اقرار الحسن نے شعبۂِ علومِ ابلاغیات کے سامنے پودا لگایا اور باقاعدہ طور پر سرگودھا میں صاف اور سرسبز پاکستان مہم کا آغاز کر دیا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

جامعہ سرگودھا میں صاف اور سرسبزپاکستان مہم کے تحت سیمینار کا انعقاد” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں